حسن عباس رضا ۔۔۔ ہو چکا آخری اعلان‘ مجھے جانا ہے

ہو چکا آخری اعلان‘ مجھے جانا ہے راستہ دے دو مری جان! مجھے جانا ہے میں نے ہر بات دل و جان سے مانی اس کی یہ بھی تو اس کا ہے فرمان، مجھے جانا ہے آخری حکم ہے‘ تعمیل تو کرنی ہو گی چاہے جیسا بھی ہو نقصان‘ مجھے جانا ہے وقت کم ہے ، سو تمہیں صاف کہے دیتا ہوں اب نہ کرنا کوئی احسان ، مجھے جانا ہے راستہ شہرِ خموشاں کا دکھا دو کہ وہاں کچھ دنوں بعد بصد شان مجھے جانا ہے آئنہ خانوں میں…

Read More

خورشید ربانی ۔۔۔ دل و نظر میں شجر ہیں ، گل و ثمر ہیں مرے

دل و نظر میں شجر ہیں ، گل و ثمر ہیں مرے چلا ہوں گھر سے تو کچھ خواب ہم سفر ہیں مرے ہوائے شہر سے مل کر وہ بھول بھال گیا کہ منتظر کسی گاؤں میں بام و در ہیں مرے بدن جلاتی چلی جا رہی ہے دھوپ مرا اور اُس پہ ظلم کہ بادل بھی بے خبر ہیں مرے ہوا چلی تو یہ اُڑتے پھریں گے شہر بہ شہر چمن میں بکھرے ہوئے جو شکستہ پر ہیں مرے زمیں کا بوجھ سمجھ کر گرا نہیں دینا کہ چھاؤں…

Read More

شاہین عباس ۔۔۔ دن کھا گئے شب سرا ہماری

دن کھا گئے شب سرا ہماری گھر واپسی ہے یہ کیا ہماری گزرا بھی نہیں قریب سے وہ مٹی بھی اُڑا گیا ہماری اے کوہِ وجود پھر سے اک بار آواز نکالنا ہماری ہر کوچ ہمارا کوچ نکلا زندہ رہے خاکِ پا ہماری ہم کیسے برہنہ تھے‘ کہاں تھے رکھی ہی رہی قبا ہماری ہم بولنے بھی لگیں گے اک دن تم سنتے رہو صدا ہماری جیسے کہ شروعِ عشق اچانک کچھ ایسی تھی ابتدا ہماری تم روشنی کرکے جا چکے تھے تربت کوئی دیکھتا ہماری

Read More

اکرم کنجاہی ۔۔۔ جب بھی تتلی نے کسی پھول پہ پَر چھوڑ دیا

جب بھی تتلی نے کسی پھول پہ پَر چھوڑ دیا اشک بے کل نے مری آنکھ کا گھر چھوڑ دیا درد و احساس بھی لشکر ہے کہ جس نے، اکثر کرکے دل زار مرا زیر و زبر چھوڑ دیا خود کو پتوں میں چھپاتے ہیں وہ پنچھی ، جن کو آگ جنگل میں لگی کاٹ کے پر چھوڑ دیا میرے یاروں کی طرح تیز ہوا میں دیکھو خشک پتّوں نے ثمربار شجر چھوڑ دیا ضعفِ بازو نہ سمجھ اور محبت پہچان تیغ نفرت کی بھی چھوڑی تھی تبر چھوڑ دیا…

Read More

رضا اللہ حیدر ۔۔۔ مر جاؤں نہ کیوں پھر سرِ بازار گری ہے

مر جاؤں نہ کیوں پھر سرِ بازار گری ہے روٹی کی طلب میں مری دستار گری ہے گھائل ہوئے پھرتے ہو فقط ایک ادا سے یہ برق مری جان پہ سو بار گری ہے سنتے ہیں کہ پھر اس نے تو پانی نہیں مانگا جس پر بھی کڑے وقت کی تلوار گری ہے یہ میری تمنا ہے بڑے لاؤ سے پالی قدموں پہ مرے ہو کے جو ناچار گری ہے خورشیدِ ضیابار سے آنکھوں میں چمک ہے صد شکر کہ پھر رات کی دیوار گری ہے گاتے ہوئے جاتی تھی…

Read More

ممتاز راشد لاہوری ۔۔۔ ٹیکسوں کی بھرمار کے ہاتھوں

ٹیکسوں کی بھرمار کے ہاتھوں خوار ہوئے سرکار کے ہاتھوں طُرفہ تماشا ہی کہہ لیجے نفرت جھیلی پیار کے ہاتھوں ہم ملبے میں ڈھل جائیں گے اک گِرتی دیوار کے ہاتھوں حیرت کی تصویر بنے ہیں پیکرِ پُراسرار کے ہاتھوں جسم بھی لاغر لاغر ٹھہرا روحانی آزار کے ہاتھوں پَل پَل زخمی ہوتے ہیں ہم نینوں کی تلوار کے ہاتھوں کیا دل سوز خبر ہے راشد یار مرا ہے یار کے ہاتھوں

Read More

King Charles III starts reign as mourning begins for late queen

At 73, Charles is the oldest monarch yet to ascend the throne of the United Kingdom, following the death of his “cherished” mother at her Scottish estate of Balmoral on Thursday. He was due to return to London from Balmoral, where the 96-year-old queen died “peacefully” after a year-long period of ill-health and decline, at the culmination of a record-breaking reign of 70 years. “During this period of mourning and change, my family and I will be comforted and sustained by our knowledge of the respect and deep affection in which…

Read More