نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔ سید ریاض حسین زیدی

جائیں جنت کو سب قرینے سے راستہ مل گیا مدینے سے رازِ ہستی ہے منکشف اس پر کھوجتا ہے جو اس دفینے سے جو بھی آئے،وہ جھولیاں بھر لے سب کو ملتا ہے اس خزینے سے ماہِ میلاد کر گیا فرخ سب مہینے ہیں اس مہینے سے آپ کو بھول کر رہیں زندہ موت آ جائے ایسے جینے سے لاکھ طوفاں ہوں درپئے آزار پار اتریں گے اس سفینے سے جو ہے خوشبو ریاض کلیوں میں ہے وہ سب آپؐ کے پسینے سے

Read More

نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔ اکرم ناصر

اشرف المخلوق میں جو سب سے اشرف ذات ہے ذکر اس کا ذکر ہے، اور بات اس کی بات ہے کل بھی تھا وردِ درودِ پاک ، ہونٹوں پر مرے آج بھی خیر الوری کی ایک تازہ نعت ہے ہوں گناہوں پر پشیماں ، رحم یا ربِ رحیم اشک آنکھوں سے رواں ہیں موسمِ برسات ہے اک الہ العالمیں ، اک رحمۃ اللعالمیں اک محمد مصطفی ہیں،اک خدا کی ذات ہے نعت ہو جائے، تو ہے ان کا کرم ان کی عطا ورنہ میں کیا ہوں بھلا ، اور کیا…

Read More

نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔۔ نسیمِ سحر

رحم ہم پر ہو اب اَے شہِ دَوسراؐ ساری دُنیا ہے درپَے شہِ دَوسراؐ ہو مجھے بھی عطا ، اَے شہِ دَوسراؐ نعت کا لحن اور لَے، شہِ دَوسراؐ صرف دو لفظ اس استغاثے کے ہیں طرزِ غالبؔ میں ’ہَے ہَے‘، شہِ دَوسراؐ بس اُسی راستے پر رہوں گامزن جو ہے میرے لیے طَے، شہِ دَوسراؐ آپ کی اک نگاہ ِکرم کے عوض لوں نہ ہر گز کوئی شے ، شہِ دوسراؐ اس خماری میں بھی ہوشمندی رہے معرفت کی مِلے مَے، شہِ دوسراؐ آپؐ کے در پہ آؤں گا…

Read More

درود اُس ؐ پر ، سلام اُسؐ پر ۔۔۔۔ محمد یسین قمر

درود اُس ؐ پر ، سلام اُسؐ پر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ درود اْسؐ پر کہ نام جس کا زباں پہ آئے تو جان و دل میں سرور و بہجت کی ایک دنیا وجود پائے سلام اُسؐ پر کہ جس کو سوچیں تو جسم و جاں کی ہر ایک رگ میں سکینتوں کے ہزار جھرنے نمو د پائیں درود اُس ؐ پر، سلام اُسؐ پر

Read More

نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔ اعجاز دانش

میں خوابِ نور سے بیدار ہو کے آیا ہوں نبیؐ کے عشق سے سر شار ہو کے آیا ہوں ہو انؐ کی محفلِ میلاد کا بیاں کیسے میں گویا آپؐ کے دربار ہو کے آیا ہوں حضورؐ ! دامنِ رحمت میں ڈھانپ لیں مجھ کو جہان والوں سے بیزار ہو کے آیا ہوں خدا کا شکر ہے میں خاکدان ہستی پر غلامِ سیدِ ابرار ہو کے آیا ہوں یہ انؐ کی نعت کا اعجاز ہی تو ہے دانش میں آج صاحبِ گفتار ہو کے آیا ہوں

Read More

نسیمِ سحر ۔۔۔ ’’آفتاب آمد دلیلِ آفتاب‘‘ ( نعتیہ نظم)

جِس کے لئے زمین دلیل،آسماں دلیل جس کے لئے ہوئے ہیں یہ کون و مکاں دلیل جس کے لئے ہیں بحر کی گہرائیاں دلیل جس کے لئے پہاڑوں کی اونچائیاں دلیل صحرا میں جس کے فیض کی زرخیزیاں دلیل گلپوش پیڑ اور حسیں وادیاں دلیل جس کی گواہ بحر کی سب بے کرانیاں چشموںسے پھوٹتا ہؤا آبِ رواں دلیل یثرب تھا جو ، مدینۂ طیبہ کہا گیا اُس بے مثال کے لئے ہے وہ مکاں دلیل جس کی صداقتوںکے لئے وقف ہر یقیں ہر اعتقاد جس کے لئے بے گماں…

Read More

صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ ۔۔۔۔ مرزا آصف رسول

صَلِّ عَلیٰ مُحَمَّدٍ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نسخۂ ردِّ ہر بلا صلّ علیٰ محمدٍ ہے اِسی حرف سے شفا صلّ علیٰ محمدٍ صَلِّ عَلیٰ نَبِیِّنَامیں کہاں ، کیا مرا درود ؟ یہ تو خدا کی ہے عطا صلّ علیٰ محمدٍ تھی مری جو بھی ابتدا ، اُس سے مجھے نہیں غرض ہو مری اس پہ انتہا صلّ علیٰ محمدٍ دل کا مرض کہ جاں کا ہو ، خوف کسی زیاں کا ہو پڑھتا رہوں سرِ دوا صلّ علیٰ محمدٍ کون ہے اکمل البشر ؟ جب لگی ڈھونڈنے نظر حُسن نے عشق سے کہا:…

Read More

نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔ محمد یٰسین قمر

یہ اک ستارہ جوپلکوں پہ اب سجا ہوا ہے مرے کریم کے در سے مجھے عطاہوا ہے فرازِ عرش کو چوما ہے میری قسمت نے حضورِ احمدِؐ مرسل یہ سر جھکا ہوا ہے ازل سے روحِ رواں کو ہے آپؐ سے نسبت مرے خمیر میں ذوقِ ثنا گندھاہوا ہے رسولِؐؐ رحمتِ عالم کا ہے کرم مجھ پر یہ گرد بادِ الم اس لیے رکا ہوا ہے یہ کس کی یاد کا پرتو ہے میرے لہجے میں کہ میرے لفظوں میں اک نور سا گھلا ہوا ہے صدائے صلِّ علیٰ آئی…

Read More

نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔ سید ریاض حسین زیدی

نعت کیا ہے بس آپ کی تعریف رب بھی کرتا ہے آپ کی توصیف اس نے قرآن آپ کو بھیجا وصف ِذاتی ہے اس کی یہ تصنیف نعت جب بھی ہے روح میں اتری مضمحل قلب کی ہوئی تالیف منصبِ نعت ہے مسیحائی دور کرتی ہے روح کی تکلیف نعت پڑھتے ہی نیکیاں جاگیں ہر برائی میں ہو گیٔ تخفیف جس بھی محفل میں ذکرِ احمد ہو آپ لاتے ہیں اس میں خود تشریف آپ کا جو بھی دم نہیں بھرتا حق رسی میں ہوا نحیف و ضعیف حسن نعت…

Read More

نعت رسول پاک صلی اللہ علیہ وسلم ۔۔۔ علی آرش

جانا ہے خلد میں تو یہ زینہ ہے نعت کا سو دفترِ یقیں میں قرینہ ہے نعت کا ان پر درود بھیج کے میں نعت کہتا ہوں اس دل میں اس لیے بھی مدینہ ہے نعت کا محشر کے روز بحرِ عمل میں ہے ان کا اسم بختِ رسا میں یعنی سفینہ ہے نعت کا دل میں دھڑک رہی ہے مرے خواہشںِ درود یہ مال و زر نہیں یہ دفینہ ہے نعت کا آقائے دو جہاں کی عطا ہے اسی لیے شعروں میں اپنے دیکھ قرینہ ہے نعت کا آرش…

Read More